FREE DELIVERY PAKISTAN

Arafat

قرآن مجید میں عرفات کاذکر ایک مرتبہ آیا ہے، جس کی تفصیل درج ذیل ہے:
عرفات کا میدان مکہ معظمہ کے وسط شہر سے مشرقی جانب تقریباً پچیس کلومیٹر دور حدودِ حرم سے باہر واقع ہے۔ عرفات کے شمال میں وادیِ وصیق، مغرب میں وادیِ عرنہ (اسی میں مسجدِ نمرہ کا اگلاحصہ واقع ہے) ہے۔ اس وادی کی لمبائی پانچ ہزار میٹر ہے، جو عرفات اور حدودِ حرم میں حدِ فاصل ہے، اور جنوب اور مشرق میں پہاڑی سلسلہ ہے، جن کا اندرونی حصہ عرفات میں شامل ہے۔یہ ایسا مقام ہے جہاں لوگ آپس میں ایک دوسرے سے متعارف ہوتے ہیں، اسی بنا پر اسے عرفات کہا جاتا ہے۔ یہاں حج کے دوران حاجی 9 ذی الحجہ کو وقوف کرتے ہیں جو حج کا سب سے بڑا رکن ہے۔